Raiwind Jor 2015 Bayans Listen & Download

Arrow up
Arrow down

+

17 - جنوری - 2018
۲۸ - ربيع الثاني - ۱۴۳۹

سوال


کیاTransplantation اعضاء انسان کی پیوندکاری جائزہے؟ اگریہ جائزنہیں ہے تواسلام اسکی صورت بتلاتاہے کہ ایک انسان مررہاہے پیوندکاری Transplantation کے علاوہ اس کاکوئی علاج نہیں توکیااس کومرنے دیاجائے حالانکہ زندگی کاخطرہ ہوتوحرام چیزبھی حلال ہوجاتی ہے جیسے بیمارآدمی کوافیون مجبوری کی حالت میں دی جاسکتی ہے تفصیل سے وضاحت فرمادیں کافی پریشانی ہے


جواب:

انسانی اعضاء کی پیوندکاری اصولاً تودرست نہیں جس کی مکمل تفصیل مفتی اعظم پاکستان حضرت مولانامفتی محمدشفیع صاحب کی کتاب انسانی اعضاء کی پیوندکاری میں ملاحظہ کی جاسکتی ہے لیکن الضرورات تبیح المخطورات اوراھون البلیتین کواختیارکرنے کے فقہی قاعدہ کے تحت شدیدمجبوری کے وقت کسی دوسرے شخص کے عضولگانے کے گنجائش معلوم ہوتی ہے۔ بشرطیکہ اس دوسرے شخص کی زندگی اورصحت کوخطرہ لاحق نہ ہودراصل اس مسئلہ میں حضرات علماء کرام کااختلاف ہے بعض حضرات شدیدمجبوری میں ناجائزکہتے ہیں لیکن ہماری رائے شدیدمجبوری کی حالت میں یہ ہوئی ہے جواوپرلکھی گئی۔ احتیاطاً استغفاراورکچھ صدقہ خیرات بھی کردیں۔ (ماخذہ ازتبویب ۸۸/۱۰۶


حوالہ:

comments powered by Disqus

Go to top
JSN Boot template designed by JoomlaShine.com