Raiwind Jor 2015 Bayans Listen & Download

Arrow up
Arrow down

+

17 - دسمبر - 2017
۲۷ - ربيع الأول - ۱۴۳۹

سوال

کن صورتوں میں مریض پرنمازساقط ہوجاتی ہے؟


جواب:

بیمارشخص جب کھڑے ہوکرنمازنہ پڑھ سکے توبیٹھے بیٹھے رکوع وسجدہ سمیت نمازپڑھے اوراگررکوع وسجدہ کرنے کی بھی قدرت نہ توبیٹھ کررکوع وسجدہ کے اشارے سے نمازپڑھے اوراگربیٹھے بیٹھے بھی نمازاداکرنے کی بھی طاقت نہ ہوتوچت لیٹ کرگھٹنے کھڑے رکھے یاقبلہ کی طرف رخ کرکے کروٹ پرلیٹ کرسرکے نیچے تکیہ رکھ کرپھرسرکے اشارے سے رکوع وسجدہ کرکے نمازپڑھے۔ اوراگرسرکے اشارے کی بھی طاقت نہ ہوتونمازمؤخرہوجائیگی۔ پھراگرپانچ نمازوں تک یہی حالت رہے اورٹھیک ہوجائے توقضاء پڑھناواجب ہے اوراگراس حال میں انتقال ہوجائے توقضاضروری نہیں اورفدیہ کی وصیت بھی واجب نہیں اوراگرپانچ نمازوں سے زیادہ یہی حالت رہے توقضاء نہیں ہے معاف ہے۔ اسی طرح اگرپانچ نمازوں کے وقت سے زائدمجنون یابے ہوش رہے تب بھی ان اوقات کی نمازوکی قضاء اورفدیہ نہیں ہے وہ معاف ہیں۔


حوالہ:

اذاتعذرعلی المریض کل القیام صلی قاعدابرکوع وسجودالرکوع والسجودصلی قاعدابالایماء مستلقیااوعلی جنبہ الاول اولٰی ویجعل تحت راسہ وسادۃ لیصیروجہہ وجہۃ الی القبلہ وان تعذرالایماء وأخرت عنہ مادام یفہم الخطاب نورالایضاع ملخصا۱۰۲
۱۰۳ اذاعجزالمریض عن القیام صلی قاعدایرکع ویسجدکذافی الہدایہ ولوقدرعلی القیام متکئاً الصحیح انہ یصلی قائمامتکئاً ولایجزیہ غیرذالک وکذاکل لوقدرعلی ان یعتمدعلی عصاأوعلی خادم لہ فانہ یقوم ویتکی کذافی التبیین ثم اذاصلی المریض قاعداکیف یقعدالاصح أن یقعدکیف یتیسرعلیہ ہکذافی السراج وان عجزعن القیام والرکوع والسجودوقدریصلی قاعدابایماء وان تعذرالقعوداومأ بالرکوع والسجودوان اضطجع علی جنبہ ووجھہ الی القبلہ واومأ جازوالاول اولٰی کذافی الکافی وان لم یستطع علی جنبہ الایمن فعلٰی الایسرکذافی السراج ووجہہ الی القبلہ کذافی القنیہ واذاعجزالمریض عن الایماء بالرأس فی ظاہرالروایۃ یسقط عنہ فرض الصلاۃ ولایعتبرالایماء بالعینین والجاجبین ان زادعجزہ علی یوم ولیلۃ لایلزمہ القضاء وان کان دون ذلک یلزمہ کمافی الاغماء وھوالاصح وان مات من ذلک المرض لاشیٔ علیہ ولایلزمہ فدیۃ کذافی المحیط ہندیہ ملخصاص ۱۳۲ ص ۱۳۷
ومن جن اواغمی علیہ خمس صلوٰت قضی ولواکثرلا(نورالایضاح ص ۱۰۳ ج) من تعذرعلیہ القیام أی کلہ لمرض اووجدلقیمہ ألحاشدیداصلی قاعداولومستنداالی وسادۃ اوانسان کیف یشاء لان المرض اسقط عنہ الارکان وقال زفرکالمتشہدقیل وبہ یفتی برکوع وسجودوان قدرعلی بعض القیام ولومتکئاً علی عصااوحائط قام وان تعذرالاالقیام اومأ قاعداوافضل من الایماء قائمالقربہ من الارض ویجعل سجوداخفض من رکوعہ ولایرفع الٰی وجہ شیأً یسجدعلیہ فان فعل وہویخفض براسہ بسجوداکثرمن رکوعہ صح والالاوان تعذرالقعوداومأ مستلقیاعلی ظہرہ ورجلاہ نحوالقبلہ غیرانہ ینصب رکبتیہ لکراہتہ مدالرجل الی القبلہ ویرفع راسہ یسیرالیصیروجہہ الیہاوالاول افضل وان تعذرالایماء براسہ وکثرت الفوائت بان زادت علی یوم ولیلۃ سقط القضاء عنہ وعلیہ الفتوٰی الدراالمختارص ۶/۹۵ ملخصا۲/۹۹

comments powered by Disqus

Go to top
JSN Boot template designed by JoomlaShine.com