Raiwind Jor 2015 Bayans Listen & Download

Arrow up
Arrow down

+

17 - جنوری - 2018
۲۸ - ربيع الثاني - ۱۴۳۹

سوال

۔ ایک شخص دمہ کامریض ہے، رمضان المبارک میں روزہ رکھنے سے سخت تکلیف ہوتی ہے۔ ایک پمپ جس کانام انہیلر(Inhaler) ہے، جس میں گیس جیسی چیزہوتی ہے۔ اس منہ میں رکھ کردباتے ہیں جس سے سانس کی نالیاں کھل جاتی ہیں اورتقریباً چھ گھنٹے تک آرام ہوجاتاہے۔ کیااس کے استعمال سے روزہ ٹوٹ جاتاہے یانہیں؟ نیزاگرٹوٹ جاتاہے توان روزوں کافدیہ دیاجاسکتاہے یاقضاء رکھناپڑیں گے؟ جبکہ ایسامریض دائمی ہے۔


جواب:

انہیلرپمپ کے استعمال سے روزہ ٹوٹ جائیگا


حوالہ:

فی الدرالمختاراودخل حلقہ غباراوذباب اودخان ولوذاکراً استحساناً لعدم امکان التحرزعنہ وفی ردالمختاروہذایفیدلہٗ انہ اذاوجدبداً من تعاطی مایدخل غبارہ فی حلقہ أفسدلوفعل شرنبلالیۃ۔ وفی الدرومفادہ أنہ لوأدخل حلقہ الدخان أفطرأی دخان کان ولوعوداً أوعنبراً لوذاکراً لامکان التحرزعنہ فلیتنبہ لہ کمابسطہ الشرنبلالی وفی ردالمختارومفادہ أی مفادقولہ دخل أی بنفسہ بلاصنع منہ قولہ أنہ لوأدخل حلقہ الدخان أی بأیّ صورۃ کان الادخال حتّٰی لوتبخرببخورٍ فاواہ الی نفسہ واشتمہ ذاکراً لصومہ أفطرلامکان التحرزعنہ وہذاممایغفل عنہ کثیرمن الناس ولایتوہم أنہ کشم الوردوماۂٖ والمسک لوضوح الفرق بین ہواء تطیب بریح المسک وشبہہٖ وبین جوہردخان وصل الی جوفہٖ بفعلہٖ الخ (ص۱۰۶، ج۲)

اگردوسرے ایام میں روزہ رکھ سکے توقضاء کرے اگرنہ رکھ سکے توفدیہ دے۔

فان عجزعن الصوم لایرجی برۂ أوکبرأطعم أی ملک۔

(الدرالمختارعلی ردالمختارص ۶۳۲، ج۲)

مفتی محمدانور (خیرالفتاویٰ جلد۴، ص 98,99)

comments powered by Disqus

Go to top
JSN Boot template designed by JoomlaShine.com