Raiwind Jor 2015 Bayans Listen & Download

Arrow up
Arrow down

+

17 - جنوری - 2018
۲۸ - ربيع الثاني - ۱۴۳۹

سوال:

بعض مریضوں کیلئے پانی نقصان دہ نہیں ہوتالیکن وضوکرنے یاغسل کرنے کی ان کے اندرہمت نہیں ہوتی، جیسے دل کے مریض۔ توکیاایسی صورت میں تیمم کرناجائزہے۔


جواب:

اگرایساشخص جسے خودوضوء یاغسل کرنامشکل ہوجیسے دل کامریض وغیرہ، لیکن کسی دوسرے شخص سے مددلے سکتاہواوروہ دوسراشخص باآسانی اس کی مددکردیتاہوتوایسی صورت میں اس شخص کیلئے تیمم کرنادرست نہیں۔ لیکن اگرایساکوئی مددکرنے والاموجودنہ ہوتواس کیلئے تیمم جائزہوگا۔


حوالہ:


Fatwa No. fno7.440

View Original Fatwa | Download Original Fatwa

comments powered by Disqus

Go to top
JSN Boot template designed by JoomlaShine.com