Raiwind Jor 2015 Bayans Listen & Download

Arrow up
Arrow down

+

17 - دسمبر - 2017
۲۷ - ربيع الأول - ۱۴۳۹

 سوال:

سٹ ٹیوب بی بی کے ذریعے بچوں کی پیدائش کاطریقہ جائزہے؟ اس میں باپ کے جرثومہ اورماں کے انڈے کوباہرملایاجاتاہے اورپھربعدمیں اس کوماں کے رحم میں رکھ دیتے ہیں؟


جواب:

مصنوعی تولیدکے مندرجہ ذیل طریقے معروف ہیں:۔
٭ نطفہ شوہرکاہواورکسی ایسی عورت کابیضہ لیاجائے جواس کی بیوی نہ ہو، پھریہ لقیحہ اس شوہرکی بیوی کے رحم میں رکھاجائے۔
٭ نطفہ شوہرکے سواکسی اورکاہواوربیضہ بیوی کاہواوراسی کے رحم میں رکھاجائے۔
٭ شوہرکانطفہ اوربیوی کابیضہ لے کربیرونی طورپران کی تلقیم کی جائے اورپھریہ لقیحہ کسی دوسری عورت کے رحم میں رکھاجائے جیسے مستعاررحم کیاجاتاہے۔
٭ کسی اجنبی شخص کے نطفہ اوراجنبی عورت کے بیضے کے درمیان بیرونی طورپرتلقیم کی جائے اورلقیحہ بیوی کے رحم میں رکھاجائے۔
٭ شوہرکانطفہ اوربیوی کابیضہ لے کربیرونی تلقیم کی جائے اوراس کواسی شوہرکی دوسری بیوی کے رحم میں رکھاجائے۔
٭ نطفہ شوہرکاہو، بیضہ اس کی بیوی کاہو، ان کی تلقیم بیرونی طورپرکی جائے اورپھراس بیوی کے رحم میں رکھاجائے۔
٭ شوہرکانطفہ لے کراس کی بیوی کے مہبل یارحم میں کسی مناسب جگہ پربطوراندرونی تلقیحہ رکھاجائے۔
ان سات صورتوں میں سے پہلی پانچ صورتیں قطعاً حرام ہیں جن کی کسی حالت میں گنجائش نہیں، کیونکہ اس میں نسب کااختلاط اورخاندان ونسل کاضیاع بھی لازم آتاہے۔ اوراس میں دوسرے شرعی محظورات بھی پائے جاتے ہیں۔ البتہ چھٹی اورساتویں صورت میں مجمع نے یہ قراردیاکہ ضرورت کے وقت ان طریقوں کے استعمال کی گنجائش ہے، بشرطیکہ لیڈی ڈاکٹریہ عمل انجام دے اوردیگرتمام ضروری احتیاطی تدابیراختیارکی گئی ہوں۔ (ماخذماہنامہ البلاغ ۳ شعبان، ۱۴۰۸) واللہ سبحانہ اعلم۔


Fatwa No. fno459.93

View Original Fatwa | Download Original Fatwa

comments powered by Disqus

Go to top
JSN Boot template designed by JoomlaShine.com